Warning: Invalid argument supplied for foreach() in /customers/5/9/3/siasatpakistan.com/httpd.www/wp-content/themes/newspress-extend/function/imp.php on line 26
Main Menu

پاک سعودی حج معاہدہ: 5ہزار مزید پاکستانی فریضہ ادا کرسکیں گے

پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان حج 2019 سے متعلق معاہدہ طے پاگیا جس کے تحت پاکستان کے کوٹے میں اضافہ کردیا گیا ہے اور اب مزید 5 ہزار پاکستانیوں کا اضافہ ہوگا۔

سعودی عرب میں وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری اور ان کے سعودی ہم منصب نے حج 2019 کے معاہدے پر دستخط کردیے جس کا اطلاق 2019 سے ہی ہوگا۔

قبل ازیں پاکستان سے ایک لاکھ 79 ہزار 210 شہری حج کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب جاتے تھے تاہم اب نئے معاہدے کے بعد ایک لاکھ 84 ہزار 210 عازمین حج ادا کر سکیں گے۔

وزیرمذہبی امور کی سربراہی میں پاکستانی وفد اگلے سال کے حج سےمتعلق معاملات طے پانے کے لیے اس وقت سعودی عرب میں موجود ہے اور اسی دوران معاہدے پر بھی دستخط کیے گئے۔

وزارت مذہبی امور کے ترجمان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب نے مردم شماری کے پیش نظر پاکستانی حج کے کوٹے میں مزید اضافے پر اتفاق کر لیا ہے۔

پاکستانی اور سعودی وفد نے مذاکرات کے دوران اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ سعودیہ کے ‘روڈ ٹو مکہ’ منصوبے میں پاکستانیوں کو بتدریج شامل کیا جائے گا جس کے تحت امیگریشن سے متعلق دستاویزات ائرپورٹ پر ہی پوری کی جائیں گی۔

روڈ ٹو مکہ منصوبے کے تحت ابتدائی مرحلے میں سندھ سے 35 ہزار عازمین حج مستفید ہوں گے جن کے امیگریشن اور دیگر معاملات کراچی ائرپورٹ پر مکمل کرلیے جائیں گے۔

سعودی عہدیداروں نے پاکستانی وفد کو کہا کہ دو سال کے اندر متعدد مرتبہ عمرہ کرنے والے افراد پر 2 ہزار روپے اضافی فیس میں کمی کا فیصلہ شاہ سلمان سے مشاورت کے بعد کیا جائے گا۔

وزارت کے ترجمان نے انکشاف کیا کہ عازمین کو پرانے منا میں سہولیات فراہم کی جائیں گی اور حج پیکج ممکنہ طور پر 3 لاکھ 40 ہزار روپے سے 3 لاکھ 50 ہزار روپے کے درمیان ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت حج گروپ آرگنائزرز کے لیے کوٹے کو کم کرنے سمیت مختلف اقدامات پر غور کررہی ہے، قریبی مقامات پر انتظامات، ٹرانسپورٹ کی سہولت میں بہتری اور عازمین حج کے لیے کھانے کی بہتری بھی فراہم کی جانے والی سہولیات میں شامل کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔

خیال رہے کہ وزارت مذہبی امور تمام اسٹیک ہولڈرز سے تجاویز حاصل کرنے کے لیے بڑے شہروں میں 6 ورکشاپ منعقد کرچکی ہے جہاں اس سال حج کرنے والے افراد نے اپنے تجربے سے آگاہ کیا اور حج انتظامات میں بہتری کے لیے اپنی تجاویز بھی دیں۔

وزارت مذہبی امور کے ترجمان کا کہنا تھا کہ وزارت حج پالیسی 2019 کو شہریوں، حج آرگنائزرز، بینک، ائرلائن کے نمائندوں، ماسٹر ٹرینرز سمیت دیگر شعبوں کے نمائندوں کی تجاویز کے بعد حتمی شکل دے گی۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*