Main Menu

مستونگ: انتخابی قافلے پر خود کش حملہ ،128شہید 200 سے زائد گھائل

رقبے کے لحاظ سے پاکستان کے سب سے بڑے صوبہ بلوچستان کے ضلع مستونگ میں بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) کے امیدوار کے قافلے میں خوفناک خودکش دھماکہ ہوا جس سے امیدوار سراج رئیسانی سمیت 128افراد شہید اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے۔

سراج درانی سابق وزیراعلیٰ بلوچستان اسلم رئیسانی کے چھوٹے بھائی تھے۔
اس سانحہ پر نگراں صوبائی حکومت نے دو روزہ سوگ کا اعلان کر دیا ہے۔

حکومتی اہلکاروں کے مطابق یہ حملہ خود کش تھا جس میں 8 سے 10 کلوگرام بارودی مواد اور بال بیئرنگ استعمال کی گئی تھیں۔ادھر میڈیا رپورٹس کے مطابق حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ عراق و شام (داعش) نے قبول کرلی۔

مستونگ میں ہونے والا خونریز حملہ 2014 میں پشاور کے آرمی پبلک سکول (اے پی ایس) میں کیئے جانے والے بیہمانہ حملے کے بعد خوف ناک ترین شمار کیا جا رہاہے۔

دوسری جانب خیبر پختون خوا میں جمعہ کے ہی روزجمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما اکرم خان درانی کے قافلے پر حملہ کیا گیا جس سے چار ہلاکتیں ہوئیں جبکہ اکرام خان درانی حملے میں محفوظ رہے۔

اس سے قبل اے این پی کے رہنما ہارون بلور اپنے متعدد ساتھیوںسمیت حالیہ انتخابی مہم کے دوران دہشت گردوں کا نشانہ بن چکے ہیں۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*