Main Menu

سپریم کورٹ کے خلاف بدزبانی: نہال ہاشمی کو سزا ، طلال چودھری کی طلبی

پاکستان کی سب سے بڑی عدالت، سپریم کورٹ کے ججوں اور پاناما کیس کی تحقیقات کے لیئے قائم کردہ جے آئی ٹی کے ممبران کو دھمکانے اور ان کی توہین کرنے کے جرم میں مسلم لیگ نواز کے سینیٹر نہال ہاشمی کو توہین عدالت کی سزا سنا دی گئی۔

جمعرات کو عدالت عظمیٰ کے سنیئر جج جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے نہال ہاشمی کے خلاف توہین عدالت کا فیصلہ سناتے ہوئے انہیں ایک ماہ کے لیئے جیل اور پچاس ہزار جرمانے کی سزا سنائی۔

دوسری جانب چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری کی بھی توہین عدالت میں طلبی ہو گئی ہے۔

انہیں عدلیہ مخالف تقریر کرنے پر از خود نوٹس لیتے ہوئے توہین عدالت کا نوٹس بھجوادیاگیا ہے۔

عدالت وزیر مملکت برائے داخلہ کے توہین عدالت کے معاملے پر 6 فروی کو سماعت کرے گی جس میں طلال چوہدری کو ذاتی حیثیت میں طلب بھی کیا گیا ہے۔

طلال چوہدری نے حال ہی میں ایک سیاسی اجتماع کے موقع پر تقریر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایک وقت تھا جب کعبہ بتوں سے بھرا ہوا ہوتا تھا، آج ہماری عدالت جو ایک اعلیٰ ترین ریاستی ادارہ ہے میں پی سی او ججز بت بنے بیٹھے ہیں۔طلال چوہدری نے مزید کہا کہ میاں صاحب انہیں باہر پھینک دو، انہیں عدالت سے باہر پھینک دو، یہ انصاف نہیں دیں گے بلکہ اپنی نا انصافی جاری رکھیں گے’۔

یاد رہے کہ لاہور ہائی کورٹ بھی نواز شریف، مریم نواز اور رانا ثنا ءاللہ کوعدلیہ کی تحقیر کرنے کے حوالے سے دائر پٹیشن پر سماعت کے دوران توہین عدالت کا نوٹس جاری کرچکی ہے۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*