Main Menu

سرکاری ڈاکٹرز کے نجی کلینک بند کر دیئے جائیں:عدالت عظمیٰ کا حکم

پاکستان کی عدالتِ عظمیٰ(سپریم کورٹ آف پاکستان) نے ملک میں نئے میڈیکل کالجز کی رجسٹریشن پر پابندی عائد کردی،عدالت عظمیٰ نے سرکاری ڈاکٹرز کے نجی کلینک بند کرنے کا بھی حکم دے دیا۔

ہفتے کے روز سپریم کورٹ کی لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس ثاقب نثار نے نجی میڈیکل کالجز میں اضافی فیسوں کے خلاف از خود نوٹس کیس کی سماعت کی۔اس موقع پراٹارنی جنرل پاکستان ، نجی میڈیکل کالجز کے مالکان اور چیف ایگزیکٹو افسران بھی کمرہ عدالت میں موجود تھے۔

 چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ میڈیکل کالجز نے طالبِ علموں سے زیادہ پیسے لیئے تو اسکی خیر نہیں ہوگی اور یہ پیسے واپس بھی کرنے پڑیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو سرکاری ڈاکٹرز اپنے پرائیویٹ کلینک چلا رہے ہیں وہ بند کروادیئے جائیں گے۔
چیف جسٹس نے کہا ’مجھے یہ مت کہیں کہ یہ ہوسکتا ہے اور یہ نہیں، میں نے ایسے لوگ اکٹھے کرنے ہیں جو ڈنڈے والے ہوں گے۔

چیف جسٹس پاکستان نے میڈیکل کالجز کا وزٹ کرنے کے لیے آئینی کمیٹی تشکیل دے دی جبکہ حکم دیا کہ کوئی میڈیکل کالج اب رجسٹرڈ نہیں ہوگا۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*