Main Menu

الیکشن ایکٹ 2017ءکے خلاف درخواست سماعت کے لیے منظور

justice-saqib-nisar

پاکستان کی عدالت عظمیٰ (سپریم کورٹ) نے الیکشن ایکٹ 2017ءکے خلاف دائر تمام(تیرہ) درخواستیں سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے سابق وزیرِ اعظم نوازشریف، حکمران جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن) اور الیکشن کمیشن سمیت تمام فریقین کو نوٹس جاری کر دیئے ہیں۔

بنچ کی سربراہی چیف جسٹس ثاقب نثار کر رہے ہیں جبکہ دیگر دو ارکین میں جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس فیصل عرب شامل ہیں۔

تمام فریقین سے 23 جنوری تک تفصیلی جواب طلب کیا گیا ہے۔ اسی روز اگلی سماعت ہو گی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے پیر کے روز سماعت کے دوران اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ پارلیمنٹ کے قانون سازی کے اختیار سے تجاوز نہیں کرسکتے لیکن آئین کی روح کے خلاف قانون سازی ہو تو عدالت جائزہ لے سکتی ہے۔

یاد رہے کہ الیکشن ایکٹ کے تحت سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے صدر نواز شریف کو سپریم کورٹ سے نا اہلی کے باوجود حکمران جماعت کا دوبارہ سربراہ مقرر کیا گیا تھا۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*