Main Menu

نوازشریف کی نااہلیت کی بنیاد بننے والے حقائق غیر متنازع تھے: سپریم کورٹ کا تفصیلی نظر ثانی فیصلہ

پاکستان کی عدالتِ عظمیٰ(سپریم کورٹ) نے سابق نااہل وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے نااہلی کے فیصلے پر نظر ثانی کے لیے دائر کی گئی درخواست کا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے۔
فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کی نااہلیت کی بنیاد بننے والے حقائق غیر منتازع تھے۔
منگل کے روز جاری ہونے والا یہ فیصلہ سپریم کورٹ کے جسٹس اعجاز افضل خان نے تحریر کیا ہے جو 23 صفحات پر مشتمل ہے۔
سپریم کورٹ کا کہنا ہے کہ پاناما کیس کے فیصلے میں کسی سقم یا غلطی کی نشاندہی نہیں کی گئی جس پر نظر ثانی کی جاتی، نواز شریف کی نا اہلی سے متعلق حقائق غیر متنازع تھے اس لیے یہ نہیں کہا جا سکتا ہے کہ فیصلے سے نواز شریف کو حیران کر دیا گیا۔
عدالت عظمیٰ نے فیصلے میں لکھا کہ ساڑھے چھ سال کی تنخواہ نواز شریف کا اثاثہ تھی جبکہ نواز شریف نے جھوٹا بیان حلفی دیا۔
سپریم کورٹ کے نظرثانی فیصلے میں نااہل وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ مریم نواز بادی النظر میں لندن فلیٹس کی بینیفشل مالک ہیں۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*