Main Menu

عید کے روز بھارتی دہشت گردی: پانچ سالہ کشمیری بچی اور نوجوان شہید

indian-army-attacking-kashm

آزاد کشمیر میں عید کے روز لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے قریب عباس پور سیکٹر میں بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ سے پانچ سالہ بچی شہید ہو گئی جس سے عید کی خوشیاں مناتے گھرمیں صف ماتم بچھ گئی۔

پاکستانی میڈیارپورٹس کے مطابق ضلع پونچھ کے عباس پور سیکٹر کے گاوں پولاس میں ایک یتیم بچی اپنے گھر کے صحن میں کھیل رہی تھی کہ بھارتی فوج کی جانب سے فائر کی گئی گولی ان کے جسم میں پیوست ہوگئی۔ معصوم بچی کو زخمی حالت میں موٹرسائیکل میں عباس پور کے ایک ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئیں۔

ادھر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی قابض فوج کی جانب سے کی گئی فائرنگ کے نتیجے میں ایک کشمیری نوجوان شہید ہو گیا۔کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ کے مطابق اسحٰق احمد پدر نامی نوجوان کو بھارتی فورسز نے کشمیر کے ضلع کلگام کے علاقے تانتری پورا میں کریک ڈاون کے دوران ہلاک کیا۔

دوسری جانب نمازِ عید کی ادائیگی کے بعد کشمیریوں نے بھارتی فورسز کی جانب سے کشمیری حریت رہنماوں کی نظر بندی کے خلاف مظاہرے کیے۔
عید الاضحیٰ کی نماز کے بعد کشمیری عوام سری نگر، اچاہی پورا اور جنگلات منڈی کے عید گاہ پر بھارت مخالف مظاہرے کر رہے تھے کہ اس موقع پر بھارتی قابض افواج نے نمازیوں کو فائرنگ کا نشانہ بنایا جس میں درجنوں کشمیری زخمی ہوئے۔

بھارتی فوج نے حریت رہنما سید علی گلانی، میر واعظ عمر فاروق، محمد یاسین ملک، شبیر احمد شاہ، مسرت عالم بٹ، محمد اشرف صحرائی، سیدہ آسیہ اندرابی اور فہمیدہ صوفی کو نمازِ عید کی ادائیگی سے روکنے کے لیے نظر بند کردیا۔سید علی گیلانی نے اپنی 17ویں عید سری نگر میں اپنے گھر میں نظر بند رہ کر گذاری۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*