Main Menu

بھارتی جاسوس دہشت گردکلبھوشن یادیو کی آرمی چیف سے رحم کی اپیل

kulbushan-yadave

بھارتی جاسوس دہشت گرد کلبھوشن یادیو نے پاکستان کی مسلح افواج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ سے رحم کی اپیل کردی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق اپنی اپیل میں کلبھوشن نے پاکستان میں جاسوسی، دہشت گردی اور تخریبی کارروائیوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے اس کے نتیجے میں ہونے والے جانی و مالی نقصان پر پشیمانی کا اظہار کیا ہے۔

بھارتی جاسوس دہشت گرد جنہیں تین مارچ دو ہزار سولہ کو بلوچستان کے علاقے ماشکیل سے گرفتار کیا گیا تھا، نے آرمی چیف سے دہشت گردی کی کارروائیوں پر معافی مانگتے ہوئے رحم کی درخواست کی ہے۔

یادر ہے کہ کلبھوشن یادیو نے اپنی سزائے موت کے خلاف ملٹری اپیلٹ کورٹ میں بھی نظرثانی درخواست دائر کی تھی، جسے مسترد کردیا گیا تھا۔
آرمی چیف اگر اپیل مسترد کرتے ہیں تو آخری اپیل صدر کو بھیجی جاسکتی ہے۔

آئی ایس پی آر نے کلبھوشن یادیو کے اعترافی بیان کی نئی ویڈیو بھی جاری کی ہے، جس کا مقصد دنیا کو پاکستان کے خلاف بھارت کے مذموم مقاصد سے آگاہ کرنا ہے۔

لگ بھگ دس منٹس کے اعترافی بیان کی نئی ویڈیو میں بھارتی جاسوس نے بتایا کہ میں کمانڈر کلبھوشن سدھیر یادیو ہوں، میرا ہندوستانی نیوی کا نمبر 41558 زولو ہے، میں بھارتی بحریہ کا کمیشنڈ افسر ہوں جبکہ میرا کوڈ نام حسین مبارک پٹیل ہے۔

کل بھوشن نے را کی مدد سے پاکستان میں دہشت گردی کی کاروائیوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ انہیں یہ سب کرنے پر پشیمانی ہو رہی ہے۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*