Main Menu

بجٹ آ گیا، اگلے مالی سال کے لیئے مجموعی حجم47 کھرب 50 ارب روپے

ishaqDarBudget2017-18

 آئندہ مالی سال 18-2017 کے لیئے 47 کھرب 50 ارب روپے کا وفاقی بجٹ پیش کردیا گیا۔

وفاقی کابینہ سے منظوری کے بعد حکمراں جماعت مسلم لیگ (ن) کا اپنے دورِ حکومت کا یہ پانچواں بجٹ ہے، جسے وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے قومی اسمبلی میں جمعہ کے روز پیش کیا۔

آئندہ مالی سال کیلئے دفاع کیلئے سات فیصد اضافے کے ساتھ 9 کھرب 20 ارب اور ہائر ایجوکیشن کیلئے 37.6 ارب مختص کیے گئے ہیں۔ تعلیم کے لیے بجٹ میں 6.1 فیصد کا اضافہ تجویز کیا ہے، جو کہ 73 کروڑ 90 لاکھ روپے بنتا ہے۔ صحت کے لیے بجٹ 18-2017 میں 12 ارب 84 کروڑ 70 لاکھ روپے تجویز کیے ہیں جبکہ آئندہ مالی سال کے لیے شرح ترقی 6 فیصد مقرر کی گئی ہے۔

کل آمدنی سے صوبائی حکومتوں کا حصہ 2 ہزار 384 ارب روپے ہو گا۔کم سے کم معاوضہ 15ہزار روپے کرنے کا اعلان کیا گیا۔ فوجی افسران اور جوانوں کے لیے تنخواہوں میں سپیشل 10 فیصد اضافہ کا اعلان بھی کیا گیا ہے جبکہ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں بھی 10 فیصد اضافے کی نوید سنائی گئی ہے۔

ٹیکس ریونیو کا کل ہدف 43 کھرب روپے سے زائد رکھا گیا ہے جس میں سے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) 40 کھرب روپے سے زائد اکٹھا کرے گا۔

آئندہ مالی سال کے دوران ترقیاتی اخراجات پر ایک ہزار ایک ارب روپے سے زائد خرچ کیے جائیں گے۔

وزیرخزانہ کے مطابق2018 کی گرمیوں تک قومی دھارے میں مزید 10 ہزار میگاواٹ بجلی کا اضافہ کیا جائے گا جس سے لوڈ شیڈنگ کا مکمل طور پر خاتمہ ہو جائے گا۔

وزیرخزانہ کے مطابق گوادر میںایک نئے ایئرپورٹ، 200 بستر کے ہسپتال اور کھارا پانی صاف کرنے کے پلانٹس کی تنصیب سمیت مجموعی طور پر 31 نئے منصوبے شروع کیے جائیں گے۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*