Warning: Invalid argument supplied for foreach() in /customers/5/9/3/siasatpakistan.com/httpd.www/wp-content/themes/newspress-extend/function/imp.php on line 26
Main Menu

برطانوی وزیراعظم کا بھارتی پائلٹ کی رہائی پر پاکستانی جذبے کا خیرقدم

برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے پاکستان کی جانب سے گرفتار بھارتی فضائیہ کے پائلٹ ابھی نندن کو خیرسگالی کے طور پر رہا کرنے کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے پر زور دے دیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور برطانوی وزیراعظم کے درمیان ٹیلی فون پر تبادلہ خیال ہوا۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ برطانوی وزیراعظم تھریسامے نے ٹیلی فونک گفتگو کے دوران پاکستان اور بھارت پر حالیہ کشیدگی کو کم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

دفتر خارجہ کے مطابق انہوں نے کہا کہ ہم ‘دونوں ممالک سے اس معاملے پر رابطے میں ہیں’۔

تھریسامے کے دفتر سے جاری بیان میں بھی ‘بھارت کے ساتھ کشیدگی کو کم کرنے کے لیے وزیراعظم عمران خان کے عزم کو سراہا گیا’ اور کہا ہے کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان اس مسئلے کے اثرات پر غور کرنے کی ضرورت پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ڈاوننگ اسٹریٹ کے ترجمان کے بیان کے مطابق ‘تھریسامے نے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے عالمی کوششوں سے تعاون کے لیے پاکستان کی جانب سے دہشت گرد گروہوں کے خلاف کیے گئے اقدامات کی اہمیت کو اجاگر کیا’۔

دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے برطانوی ہم منصب کو مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں ہونے والے حملے کے بعد پیدا صورت حال پر ‘پاکستان کے موقف’ سے آگاہ کیا۔

خیال رہے پلوامہ میں بھارتی پیراملٹری کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا تھا جس کے نتیجے میں 44 اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

وزیراعظم نے تھریسامے سے گفتگو میں انہیں پاکستان کے دورے کی دعوت دی جس پر برطانوی وزیراعظم نے جوابی دعوت دی۔

واضح رہے کہ دونوں رہنماؤں کے درمیان ایک ایسے موقع پر ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے جب پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات گزشتہ چند ہفتوں سے کشیدہ ہیں اور بھارت کی دخل اندازی کے بعد جنگ کے خدشات پیدا ہوگئے تھے۔

پاکستان کی جانب سے خطے میں امن کی خاطر خیر سگالی کے طور پر بھارتی ونگ کمانڈر ابھی نندن کی رہائی کے بعد کشیدگی میں کمی آئی ہے۔

قبل ازیں قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی نے وزیراعظم عمران خان کو فون کرکے بھارتی فضائیہ کے ونگ کمانڈر ابھی نندن کو جذبہ خیر سگالی کے تحت رہا کرنے کے فیصلے کو قابل تحسین قرار دے دیا تھا۔

دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ ’قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی نے پاکستان اور بھارت کے مابین جارحیت کو ’فوراً کم‘ کرنے کے لیے مذکورہ اقدام کو اہم قرار دیا اور انہوں نے اس معاملے پر اپنے تعاون کی پیش کش بھی کی‘۔

قطری نیوز ایجنسی کے مطابق مسلم ممالک کے دونوں رہنماؤں نے پاک بھارت کے مابین حالیہ تنازعات سمیت خطے اور عالمی سطح پر رونما ہونے والے سیاسی حالات پر تبصر کیا۔

نیو ایجنسی نے رپورٹ کیا کہ ’قطری امیر نے دونوں ممالک کو تحمل پر مبنی رویہ اختیار کرنے کی تلقین کی‘۔

دوسری جانب بھارتی میڈیا نے گزشتہ روز رپورٹ کیا تھا کہ قطر کے امیر نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سے فون پر رابطہ کیا۔

پاکستان نے یکم مارچ کو بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو سخت سیکیورٹی میں واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کردیا تھا۔

پاکستان کی جانب سے بھارتی طیاروں کو گرانے کے بعد گرفتار کیے گئے بھارتی پائلٹ ابھی نندن کو تمام کاغذی کارروائی کے بعد واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کر دیا گیا تھا اور یوں وہ واپس اپنے ملک پہنچ گئے۔

ابھی نندن کی حوالگی کے موقع پر بھارت کی جانب سے اپنی سرحد پر پرچم اتارنے کی تقریب کو منسوخ کردیا گیا جبکہ پاکستان کی جانب سے واہگہ بارڈر پر حسب معمول پرچم اتارنے کی تقریب منعقد ہوئی۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*