Warning: Invalid argument supplied for foreach() in /customers/5/9/3/siasatpakistan.com/httpd.www/wp-content/themes/newspress-extend/function/imp.php on line 26
Main Menu

سال کے پہلے ماہ کے دوران مہنگائی میں 7 فیصد سے زائد اضافہ ریکارڈ

اسلام آباد: روپے کی قدر میں تیزی سے ہونے والی کمی کی وجہ سے ابتدا میں حاصل ہونے والے فوائد کے ثمرات زائل ہوگئے جس کے نتیجے میں سال بہ سال کے اعتبار سے رواں سال کے پہلے ماہ میں مہنگائی میں 7.2 فیصد کا اضافہ ہوگیا۔

ڈانن اخبار کی رپورٹ کے مطابق پاکستان بیورو آف اسٹیٹکس(پی بی ایس) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ برس اکتوبر میں ملک میں مہنگائی کی شرح نے 4 سالوں کی انتہائی سطح 6.78 فیصد کو عبور کرلیا تھا۔

جس کے بعد نومبر اور دسمبر میں عالمی منڈیوں میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے باعث بڑے شہروں میں پھلوں اور سبزیوں کی قیمت کے اعتبار سے مہنگائی میں معمولی سی کمی ہوئی۔

واضح رہے کہ حکومت نے مالی سال 19-2018 کے لیے مہنگائی کی سطح 6 فیصد رہنے کا امکان ظاہر کیا تھا لیکن جنوری میں ہی مہنگائی نے اس سطح کو عبور کرلیا جبکہ مالی سال 2018 میں مہنگائی کی شرح 3.92 اور اس سے قبل کے مالی سال میں 4.16 فیصد تھی۔

گزشتہ 2 سال سے خام تیل کی قیمتوں میں اضافے، روپے کی قدر میں کمی اور اسٹیٹ بینک پاکستان کی سخت مانیٹری پالیسی کی بدولت مہنگائی میں اضافہ ہوا۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے شرح سود میں 0.25 فیصد کے اضافے کے بعد شرح سود 10.25 فیصد ہوگئی جو 6 سالوں کی بلند ترین سطح پر ہے، اسٹیٹ بینک نے گزشتہ برس جنوری سے اب تک اس میں کل 4.50 فیصد کا اضافہ کیا ہے۔






Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked as *

*